Arts

ایک آرزو

اے رب! میں تھک گیا ہوں انسانی محفلوں سے!

جب دل اداس ہو تو محفلوں میں خوشی نہیں ہو سکتی

میں ہنگامے سے فرار چاہتا ہوں، میرا دل چاہتا ہے۔

وہ خاموشی جسے تقریر پر جوش سے پیار ہو سکتا ہے!

میں خاموشی کی شدید خواہش کرتا ہوں، میں اس کی شدید خواہش کرتا ہوں۔

پہاڑ کے کنارے ایک چھوٹی سی جھونپڑی ہو سکتی ہے۔

فکر سے آزاد ہو کر میں ریٹائرمنٹ میں رہ سکتا ہوں۔

میں دنیا کی فکروں سے آزاد ہو سکتا ہوں۔

پرندوں کی چہچہاہٹ سے لیر کی خوشی مل سکتی ہے۔

بہار کے شور میں آرکسٹرا کی دھن ہو سکتی ہے۔

پھول کی کلی پھٹنا مجھے خدا کا پیغام دے سکتا ہے۔

پوری دنیا کو دکھا رہا ہوں 1 یہ چھوٹا شراب کپ ہو سکتا ہے۔

میرا بازو میرا تکیہ ہو سکتا ہے، اور سبز گھاس میرا بستر ہو سکتا ہے۔

جماعت کو میرے خلوت کے معیار کو شرمندہ کرنا

شباب میرے چہرے سے اتنا مانوس ہو کہ

اس کا چھوٹا سا دل جس میں مجھ سے کوئی خوف نہیں ہو سکتا

راستے کے دونوں طرف سبز درخت کھڑے ہیں۔

چشمے کا صاف پانی ایک خوبصورت تصویر فراہم کرتا ہے۔

پہاڑی سلسلے کا نظارہ بہت خوبصورت ہو سکتا ہے۔

اسے دیکھنے کے لیے پانی کی لہریں بار بار اٹھتی ہیں۔

سر زمین کی گود میں سو رہا ہے۔

جھاڑیوں سے بہتا ہوا پانی چمکتا ہو سکتا ہے۔

بار بار پھولوں کی ٹہنیاں پانی کو چھوتی رہیں

جیسے کوئی حسن خود کو آئینے میں دیکھ رہا ہو۔

جب سورج شام کی دلہن پر مرٹل لگاتا ہے۔

ہر پھول کی انگوٹھی گلابی مائل سنہری ہو سکتی ہے۔

جب رات کے مسافر تھکاوٹ سے پیچھے ہٹ جاتے ہیں۔

ان کی واحد امید میرا ٹوٹا ہوا مٹی کا چراغ ہو سکتا ہے۔

بجلی انہیں میری جھونپڑی تک لے جائے۔

جب بادل پورے آسمان پر منڈلا رہے ہوں۔

فجر کی کویل، وہ صبح کا مؤذن 2

وہ میرا معتمد ہو، اور میں اس کا معتمد ہوں۔

میں مندر یا مسجد کا پابند نہ ہوں۔

جھونپڑی کا سوراخ ہی صبح کی آمد کی خبر دیتا ہے۔

جب شبنم پھولوں کا وضو کرنے آئے

رونا میری دعا، رونا میرا وضو ہو۔

اس خاموشی میں میرے دل کی آہیں اتنی بلند ہو جائیں۔

کہ ستاروں کے کارواں کے لیے کلریون کی پکار میرا نوحہ ہے۔

میرے ساتھ رونے والا ہر رحم دل ہو۔

شاید یہ ان لوگوں کو بیدار کر دے جو بے ہوش ہو سکتے ہیں۔

علامہ محمد اقبال

admin

Experienced content writer and SEO expert. Crafting engaging, optimized content to boost online visibility. Let's make your brand shine!

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button